Azaranica is a non-biased news aggregator on Hazaras and Hazarajat...The main aim is to promote understanding and respect for cultural identities by highlighting the realities they are facing on daily basis...Hazaras have been the victim of active persecution and discrimination and one of the reasons among many has been the lack of information, awareness and disinformation...... To further awareness against violence, disinformation and discrimination, we have launched a sister Blog for youths and youths are encouraged to share their stories and opinions; Young Pens

Saturday, July 23, 2016

’کابل میں شہریوں پر خودکش حملہ جنگی جرم ہے‘


Image copyrightREUTERSImage captionدولتِ اسلامیہ مشرقی افغانستان میں سر گرم ہے لیکن اس سے پہلے کابل میں ہونے والے کسی حملے کی ذمہ اس نے قبول نہیں کی تھی

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ہزارہ برادری کے احتجاج پر خودکش حملے میں 80 افراد کی ہلاکت پر ملک میں اتوار کو سوگ منایا جا رہا ہے۔

دوسری جانب اقوام متحدہ نے خودکش حملے میں عام شہریوں پر حملے کو’ جنگی جرم قرار دیا ہے۔

خودکش حملے میں کم از کم 80 ہلاکتوں کے علاوہ 230 سے زیادہ افراد زخمی ہیں

خود کو دولتِ اسلامیہ کہلانے والی شدت پسند تنظیم سے روابط والی نیوز ایجنسی اعماق کا کہنا ہے کہ دو خود کش حملہ 
آوروں نے کابل میں اہل تشیع کے احتجاج میں اپنے آپ کو اڑا دیا۔

No comments:

Post a Comment